دنیا کے کس ملک میں سب سے زیادہ تیز 4G انٹرنیٹ دستیاب ہے؟ تفصیلات جانئے

فور جی نیٹ کا سُنتے ہی آپ کے ذہن میں تیز ترین نیٹ کا تصور اُبھرتا ہو گا ۔ گزشتہ کچھ سالوں سے دنیا بھر میں فور جی ایل ٹی ای کی سپیڈ کی خاصیت کی وجہ سے استعمال میں بہت تیزی دیکھنے میں آئی ہے لیکن پھر بھی انٹرنیٹ کی سپیڈ اور کوریج کا انحصار ملک اور کیریئر پر ہوتا ہے ۔ٹیکنالوجی سے متعلق جریدے ”اوپن سگنل “نے فورجی ایل ٹی ای کی تیز ترین اور مستقل سروس دینے والے ممالک کی فہرست جاری کی ہے جس کے مطابق نیوزی لینڈ میں 36میگا بائٹس پر سکینڈ ،سنگا پور میں 33میگا بائٹس پرسکینڈ ،رومانیہ میں 30میگا بائٹس پر سکینڈ ،ساوتھ کوریا میں 29میگا بائیٹس پر سکینڈ اور ڈنمارک میں 26میگا بائٹس پر سکینڈسپیڈ فراہم کی جا تی ہے ۔

رپورٹ کے مطابق فور جی ایل ٹی ای نیٹ ورک کی اوسطً سپیڈ تھر ی جی ،ٹو جی اور وائی فائی کے مقابلے کئی گنا زیادہ ہے ۔وائی فائی کی ڈاﺅن لوڈنگ سپیڈ پانچ میگا بائٹس پر سیکنڈ ہوتی ہے ۔ٹوجی کی ڈاﺅن لو ڈنگ سپیڈ 0.1میگا بائٹس پر سیکنڈ ہے ۔تھر ی جی نیٹ ورک کی سپیڈ 3.2میگا بائٹس پر سکینڈ ہے جبکہ فور جی ایل ٹی ای کی سپیڈ 12.6میگا بائٹس ہوتی ہے۔

اوپن سگنل نے رپورٹ میں دنیا بھر میں سب سے زیادہ سپیڈ دینے والی پانچ بڑے نیٹ ورک کی کمپنیوں کا تذکرہ بھی کیا گیا۔ جس کے مطابق سنگا پور کی ”سٹار حب“ 38میگا بائٹس پر سکینڈ سپیڈ کے ساتھ پہلے ،رومانیہ کی ”ووڈا فون“36میگا بائٹس پر سکینڈ کے ساتھ دوسرے،ڈنمارک کی ”ٹی سی ڈی“35میگا بائٹس پر سکینڈکے ساتھ تیسرے،ساوتھ کوریا کی ”اولے“34میگا بائیٹس پرسکینڈ کے ساتھ چوتھے اور سنگا پور کی ”سنگ ٹل“32میگا بائٹس پر سکینڈ سپیڈ کے ساتھ پانچویں نمبر پر ہے ۔پاکستان میں بھی 3G اور 4G ٹیکنالوجی متعارف تو کرائی جا چکی ہے لیکن بدقسمتی سے بہت سے علاقوں میں یا تو رینج ہی نہیں اور جہاں رینج یا سگنل میسر ہیں وہاں بھی خاطر خواہ سپیڈ کا حصول ممکن نہیں اور اسی وجہ سے پاکستان کا اس فہرست میں دور دور تک کوئی نام و نشان نہیں، اور پاکستانی نیٹ ورکس پر جس طرح کی سپیڈ مہیا کی جا تی ہے اسے 4G کہنا تو محض دل کو تسلی دینے کے مترادف ہی ہے۔

Comments

comments

//pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js

اپنا تبصرہ بھیجیں