بہار رُت میں اجاڑ رستے۔۔

بہار رُت میں اجاڑ رستے۔۔
تکا کرو گے تو رو پڑو گے۔۔
کسی سے ملنے کو جب بھی محسن۔۔
سجا کرو گے تو رو پڑو گے۔۔
تمھارے وعدوں نے یار مجھ کو ۔۔
تباہ کیا ہے کچھ اس طرح سے۔۔
کہ زندگی میں جو پھر کسی سے۔۔
دغا کرو گے تو رو پڑو گے۔۔
میں جانتا ہوں میری محبت ۔۔
اجاڑ دے گی تمہیں بھی ایسے۔۔
کہ چاند راتوں میں اب کسی سے۔۔
ملا کرو گے تو رو پڑو گے۔۔
برستی بارش میں یاد رکھنا۔۔
تمہیں ستائیں گی میری آنکھیں۔۔
کسی ولی کے مزار پر جب ۔۔
دعا کرو گے تو رو پڑو گے۔۔۔
(محسن نقوی)

Comments

comments

//pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js

اپنا تبصرہ بھیجیں