فون نمبر کی ایجاد؟

جب فون نمبر ایجاد نہیں ہوئے تھے تو اس سے پہلے فون کالیں فون کے مالک کے نام کے ذریعے کی جاتی تھیں۔ اگر کسی شخص نے دوسرے شخص کو کال کرنا ہوتی تو ایکسچینج میں موجود آپریٹر کو اپنے مطلوبہ شخص کا نام بتاتا، آپریٹر اپنے سامنے موجود بہت سی ٹیلی فون لائنوں میں سے ایک لائن کے ذریعے اُس شخص سے کال ملا دیتا۔ ٹیلی فون کے موجد الیگزینڈر گراہم بیل کے دوست ڈاکٹر موسس نے فون نمبروں کی ایجاد میں بنیادی کردار ادا کیاتھا۔ ہوا یہ کہ شہر میں چیچک کی وبا پھیل گئی۔ ڈاکٹر موسس نے گراہم بیل سے کہا کہ ٹیلی فون آپریٹر بھی اس وبا کی لپیٹ میں آ کر بیمار پڑ گئے تو لوگوں کے لیےفون پر ایک دوسرے سے رابطہ کرنا مشکل ہو جائے گا۔ اس کے علاوہ کسی ہنگامی حالت میں ڈاکٹر کو جلد از جلد بلانا ہو تو موجودہ طریقے کے مطابق ایسا ممکن نہیں ہے، کوئی ایسا طریقہ اختراع کیا جائے کہ لوگ ہنگامی حالت میں آپریٹر کی مدد کے بغیر مطلوبہ شخص سے جلد رابطہ کر سکیں۔ چنانچہ ٹیلی فون رکھنے والوں کے نام کی بجائے ہر شخص کے لیے ایک مخصوص نمبر مختص کیا گیا۔ ٹیلی فون نمبر پہلی بار امریکہ کے شہر لوویل میں 1879ء سے 1880ء کے درمیانی عرصے میں استعمال کیے گئے۔ یہ نظام اتنا پسند کیا گیا اور اتنا کار آمد ثابت ہوا کہ اسے آج بھی استعمال کیا جاتا ہے۔

Comments

comments

//pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js

اپنا تبصرہ بھیجیں