میری ہر سانس کہتی ہے

 میری ہر سانس کہتی ہے تمہارے دم سے چلنا ہے سفر زیست کی ہر منزل  تمہارے نام کرنی ہے  دھڑکتے دل کی ہر سر کو  تمہارے دل سے ملانا ہے  چمکتے چاند تاروں سے  کہیں آگے بہت آگے  مجھے کچھ خواب رکھنے ہیں جو صرف تمہارے میرے ہوں جہاں پر .. کوئ بشر نہ ہو مزید پڑھیں

وقت کے پار جا سکو تو سنو!!

وقت کے پار جا سکو تو سنو!! میرے کچھ لوگ وہاں رہتے ہیں۔ ۔ ان سے کہنا بہت اداس ہوں میں ان سے کہنا یہ دل نہیں لگتا ان سے کہنا بہت اکیلی ہوں ان سے کہنا میں رویا کرتی ہوں ان سے کہنا مجھے قرار نہیں ان سے کہنا ہے انتظار بہت ان سے مزید پڑھیں

چاند کا دکھ بانٹنے نکلے ہیں اب اہل وفا

چاند کا دکھ بانٹنے نکلے ہیں اب اہل وفا روشنی کا سارا شیرازہ بکھر جانے کے بعد زخم جو تم نے دیا وہ اس لیے رکھا ہرا زندگی میں کیا بچے گا زخم بھر جانے کے بعد شام ہوتے ہی چراغوں سے تمہاری گفتگو ہم بہت مصروف ہو جاتے ہیں گھر جانے کے بعد

بہت دنوں سے نہیں اپنے درمیاں وہ شخص

بہت دنوں سے نہیں اپنے درمیاں وہ شخص اداس کر کے ہمیں چل دیا کہاں وہ شخص؟ قریب تھا تو کہا ہم نے سنگدل بھی اسے–!! ہوا جو دور تو لگتا ہے جان- جاں وہ شخص اس ایک شخص میں تھیں دلربائیاں کیا کیا  ہزار لوگ ملیں گے، مگر کہاں وہ شخص؟؟؟ وہ جس کے مزید پڑھیں

میں کھلونا اک مٹی کا

میں کھلونا اک مٹی کا تیرے کُن سے جو تخلیق ہوا تیرے کرم نے ذی روح کیا مجھے تیرے حکم سے سانسیں چلتی ہیں تیرے فضل سے ہستی قائم ہے تُو اوّل تُو ہی آخر ہے تُو ظاھر تُو ہی باطن ہے اِک اور کرم فرما مجھ پر میرے سارے زنگ اُتار یا رب اور مزید پڑھیں

حالات کی اجڑی محفل میں اب کوئی سلگتا ساز نہیں 

حالات کی اجڑی محفل میں اب کوئی سلگتا ساز نہیں  نغمے تو لپکتے ہیں لیکن شعلوں سا کہیں انداز نہیں  ہر برگ حسیں کو دیتے ہیں زخموں کے مہکتے نذرانے  کانٹوں سے بڑا اس گلشن میں پھولوں کا کوئی دم ساز نہیں  یا سایۂ گل کا ہے یہ کرم یا فرق ہے دانے پانی کا  مزید پڑھیں

سوچتا ہوں

سوچتا ہوں سوچتا ہوں‌کہ محبت سے کنارا کرلوں دل کو بیگانہء ترغیب و تمنا کرلوں سوچتا ہوں‌کہ محبت ہے جنونِ رسوا چند بے کار سے بے ہودہ خیالوں کا ہجوم ایک آزاد کو پابند بنانے کی ہوس ایک بیگانے کو اپنانے کی سعیء موہوم سوچتا ہوں کہ محبت سے سرور و مستی اس کی تنویر مزید پڑھیں

بہت دنوں سے نہیں اپنے درمیاں وہ شخص

بہت دنوں سے نہیں اپنے درمیاں وہ شخص اداس کر کے ہمیں چل دیا کہاں وہ شخص؟ قریب تھا تو کہا ہم نے سنگدل بھی اسے–!! ہوا جو دور تو لگتا ہے جان- جاں وہ شخص اس ایک شخص میں تھیں دلربائیاں کیا کیا  ہزار لوگ ملیں گے، مگر کہاں وہ شخص؟؟؟ وہ جس کے مزید پڑھیں

کچھ دن تَو بسو مری آنکھوں میں

کچھ دن تَو بسو مری آنکھوں میں پھر خواب اگر ہو جاؤ تو کیا کوئی رنگ تو دو مرے چہرے کو  پھر زخم اگر مہکاؤ تو کیا جب ہم ہی نہ مہکے پھر صاحب تم بادِ صبا کہلاؤ تو کیا اِک آئینہ تھا سو ٹوٹ گیا اب خود سے اگر شرماؤ تو کیا تم آس مزید پڑھیں